اکرام اللہ گنڈا پور پر خودکش حملہ میں زخمی پولیس اہلکار حکومتی بے حسی کا شکار

0
156
abdul-razzaq-d-i-khan-2 (1)

ڈیرہ اسماعیل خان (پاکستان 247نیوز) خیبرپختونخوا کے ضلع ڈیرہ اسماعیل خان میں عام انتخابات سے قبل الیکشن کمپین کے دوران سردار اکرام اللہ خان گنڈا پور پر خودکش حملے کے دوران زخمی ہونے والا پولیس اہلکار علاج معالجے کےلئے حکومتی امداد کا منتظر ہے، کیونکہ تاحال نہ تو مثالی پولیس کے سربراہ اور نہ ہی انصاف کے نام پر بننے والی حکومت کے کسی عہدیدار نے اُن کی طرف کوئی توجہ دی ہے۔
abdul-razzaq-d-i-khan-2 (1)

یاد رے کہ رواں سال 22 جولائی کو ڈیرہ اسماعیل کی تحصیل کولاچی میں پاکستان تحریک انصاف کے صوبائی اسمبلی کے اُمیدوار و سابق صوبائی وزیر سردار اکرام اللہ خان گنڈا پور پر انتخابی مہم کے دوران خودکش حملہ ہوا جس کے نتیجہ میں اکرام اللہ اور ایک اہلکار دل نواز جاں بحق جبکہ کانسٹیبل عبد الرزاق زخمی ہوگیا تھا۔زخمی اہلکار عبد الرزاق کو ابتدائی طبی امداد کےلئے پشاور کے لیڈی ریڈنگ ہسپتال منتقل کردیا گیا تھا جہاں آپریشن کے دوران اُن کے پاؤں میں راڈ لگانے کے بعد واپس ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ڈی آئی خان منتقل کردیا گیا۔
لازمی پڑھیں:افسوسناک خب، سابق پاکستانی کرکٹر محمد آصف کی گاڑی کو خوفناک حادثہ، اہلیہ اور 2 بچیوں سمیت زخمی

زخمی ہولیس اہلکار کے بھائی کا کہنا ہے کہ عبدالرزاق گزشتہ 4 ماہ سے چارپائی پر پڑا ہوا ہے، اس دوران نہ تو اعلیٰ پولیس افسران اور نہ ہی حکومتی عہدیداروں نے اُن کی خیریت معلوم کی کیونکہ وہ عبد الرزاق کے مزید علاج کی استطاعت نہیں رکھتے۔
abdul-razzaq-d-i-khan-2 (2)
میڈیا کو دیئے گئے بیان میں زخمی پولیس اہلکار کے بھائی نے یہ بھی کہا کہ عبد الرزاق کو علاج کےلئے لاہور منتقل کیا جارہا تھا اور جب اس ضمن میں محکمہ پولیس سے ایمبولینس کی فراہمی کےلئے درخواست کی تو اُس میں بھی انہوں نے لیت و لعل سے کام شروع کردیا۔
abdul-razzaq-d-i-khan
عبد الرزاق کے بھائی نے خیبرپختونخوا کی مثالی پولیس کے سربراہ صلاح الدین خان محسود اور وزیر اعلیٰ محمود خان سے مطالبہ کیا کہ ملک میں امن کے قیام کےلئے قربانی دینے والے اُس کے بھائی کے علاج کےلئے فوری طور پر اقدامات اٹھائے جائیں۔

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here