ہالینڈ کی سب سے بڑی مسلم مخالف سیاسی جماعت کے سابق رکن دائرہ اسلام میں داخل

0
100

ہالینڈ(پاکستان247نیوز)نیدر لینڈ کی دائیں بازو کی سب سے بڑی انتہا پسند اور مسلم مخالف جذبات کی حامل سیاسی جماعت کے سابق رکن جورام وین کلیورن نے اسلام قبول کر لیا ہے۔
تفصیل کے مطابق جورام وین کلیورن اسلام مخالف جذبات کی حامل جماعت ”پارٹی فار فریڈم“ کے دوسرےسابق رکن ہیں جنہوں نے اسلام قبول کیا ہے اس سے قبل اسی جماعت کے رکن آرنا وڈوین ڈرون بھی اسلام قبول کر چکے ہیں۔
گیئرٹ ویلڈرانتہا پسند جماعت ”پارٹی فار فریڈم“ کا سربراہ ہے جس نے نبی آخرالزماں صلی اللہ علیہ والہ وسلم کے گستاخانہ خاکوں کا مقابہ کرنے کا اعلان کیا تھا۔
ایک اخبار کو انٹر ویو دیتے ہوئے جورام وین کلیورن نے اپنے سابقہ اسلام مخالف بیانات پر شرمندگی کا اظہار کیا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ ان کی جماعت کی پالیسی تھی کہ ہر غلط کام کے اسلام سے جوڑ دیا جاتا تھا۔ انہوں نے یہ بھی اعتراف کیا کہ وہ اس وقت غلط تھے۔
انہوں نے ایک انٹر ویو میں دائرہ اسلام میں داخل ہونے کا پس منظر بیان کرتے ہوئے کہا کہ ایک اسلام مخالف کتاب لکھنے کے دوران ان پر اسلام کے حقائق کھلتے گئے جس کے بعد ان کے اسلام دشمنی کے نظریات بدل گئے۔
واضح رہے کہ جورا م وین کلیورن سنہ2010سے لے کرسنہ2014تک پارلیمنٹ کے رکن رہے۔انہوں نے اسلام اور قرآن کے مخالف بیانات دیئے تھے، وہ اپنی سابق سیاسی جماعت میں مسلم مخالف سیاستدان کے طور پر جانے جاتے تھے۔سنہ2014میں ویلڈر کی جماعت کو چھوڑنے کے بعد انہوں نے اپنی ایک نئی سیاسی جماعت کی بنیاد رکھی جسے 2017کے انتخابات میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا جس کے بعد جورام وین کلیورن نے ہمیشہ ہمیشہ کیلئے سیاست چھوڑ دی تھی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here