پاکستان میں خواتین کا وہ قبرستان جہاں لوگ جانا ہی توہین سمجھتے ہیں کیونکہ ۔ ۔ ۔

0
616

گھوٹکی(پاکستان ٹوئنٹی فورسیون نیوز)دنیا بھر میں یوں تو قبرستان موجود ہیں جہاں مرنے کے بعد انسانوں کو دفن کیاجاتاہے لیکن پاکستان میں خواتین کا ایک ایسا قبرستان بھی موجود ہے جہاں آج بھی لوگ جانا اپنی توہین سمجھتے ہیں جبکہ یہ بھی انکشاف ہوا ہے کہ یہاں مدفون خواتین کو نہ تو کفن پہنایا گیا اور نہ ہی نمازجنازہ نصیب ہوسکی۔
نجی ٹی وی چینل کے مطابق گھوٹکی سے ڈیڑھ سو کلومیٹر دور علاقہ فتوہ میں بدقسمت خواتین کا قبرستان موجود ہے جہاں ساڑھے چار سو سے زائد خواتین دفن ہیں ، ان عورتوں کو مختلف اوقات اورگردونواح کے علاقوں میں کاروکاری کے الزام میں قتل کیاگیاتھا، آج اس قبرستان میں کانٹے دار جھاڑیاں، تپتی ریت اور دوردورتک سناٹا ہے جبکہ قبروں کے نشانات بھی نہیں۔
ذرائع کے مطابق قتل کے بعد میت کو غسل بھی نہیں دیاجاتا، سالوں تک یہ ظلم ہوتا رہا اور قتل کی ان وارداتوں میں کسی نہ کسی طرح مقامی سرداروں کا بھی کردار ہے ، اب اس قبرستان میں تدفین کی تازہ کوئی اطلاع نہیں لیکن کاروی کاری قراردینے کا سلسلہ آج بھی جاری ہے ، قانون بھی موجود ہے لیکن انتظامیہ کی مجرمانہ غفلت اور سیاسی اثرورسوخ کے ماتحت ہونے کی وجہ سے قانون پر عمل درآمد نہیں ہوتا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here