وہ علاقہ جہاں بچوں کی پیدائش سے شرح اسقاط حمل زیادہ ہوگئی

0
73

نوک(پاکستان 247نیوز) اولاد جیسی نعمت کا دنیا میں کوئی نعم البدل نہیں لیکن بعض ناعاقبت اندیش جوڑے بچوں کی پیدائش پر اسقاط حمل کوترجیح دینے لگے ہیں اور گرین لینڈ بچوں کی پیدائش کی شرح سے اسقاط حمل کی شرح میں آگے نکل گیا، جہاں گزشتہ چھ سال سے سالانہ اوسطا سات سو بچے پیداہورہے ہیں جبکہ اسی عرصے میں ہرسال تقریباً800 خواتین نے اسقاط حمل کرایا۔
غیرملکی میڈیا ک ے مطابق ڈنمارک سے آزادی حاصل کرنے والا دنیا کا سب سے بڑا جزیرہ گرین لینڈ ایک ناقابل یقین ریکارڈ کا حامل ہوگیاجہاں نصف سے زیادہ حاملہ خواتین اسقاط حمل کروالیتی ہیں۔سرکاری اعداد وشمار کے مطابق ہر ہزار میں سے 30 خواتین حمل ٹھہرنے کے بعد اسقاط حمل کو ترجیح دیتی ہیں جبکہ ڈنمارک میں یہ شرح ہزار میں سے 12 خواتین کی ہے تاہم 2013 سے اب تک کے اعداد وشمار پریشان کن ہیں۔اس علاقے میںاتنے بڑے پیمانے پر اسقاط حمل کی وجوہات میں تعلیم کی کمی، غربت اور سماجی ناہمواریاں ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here