جبری شادی ، شوہر کیساتھ جسمانی تعلقات کیخلاف مزاحمت کرنیوالی خاتون کو سزا سنادی گئی

0
14
husband-murdered-his-wife

لاہور(پاکستان ٹوئنٹی فورسیون نیوز)خرطوم کی شرعی عدالت نے جبراً شادی اور شوہر سے جسمانی تعلقات کیخلاف آواز اٹھانے والی نورہ حسین کو اپنے شوہر کو قتل کرنے کے جرم میں قید کی سزا سنادی۔

العربیہ کے مطابق 19 سالہ نورہ حسین پر الزام ہے کہ اس نے جبری شادی کو مسترد کرتے ہوئے شوہر کو آبرو ریزی کا قصور وار قرار دے کر قتل کر دیا تھا۔نورہ حسین کا کہنا ہے کہ اس کے والدین نے تین سال قبل جب وہ سولہ سال کی تھیں تو اس کی شادی اس کے چچا زاد کے ساتھ کرانے کی کوشش کی۔ وہ اس شادی کے خلاف تھی اور بھاگ کر ایک دوسرے رشتے دار کے پاس چلی گئی۔ اس کے والدین نے اسے منایا اور یقین دلایا کہ اب وہ اس کی شادی اس شخص سے نہیں کرائیں گے، مگر واپس لانے کے بعد انہوں نے جبرا اس کے ساتھ نکاح پڑھا دیا۔ شادی کے بعد شوہر نے اس کے قریب آنے کی ایک بار کوشش کی مگر نورہ نے اسے قریب نہ آنے دیا۔ اس نے دوبارہ کوشش کی جس پر دونوں میں جھگڑا ہوا۔ نورہ نے اپنے ہی شوہر کو آبرو ریزی کا قصور وار قرار دیتے ہوئے تیز دھار آلے کے وار سے اسے قتل کر دیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here