حج کے قافلے میں شامل عورت پر سانپ چمٹ گیا، سراوردم کو چھاتیوں کے درمیان ملائے رکھا، وہ کسی کو نقصان نہیں پہنچ رہا تھا حتیٰ کہ ۔۔۔۔

0
151
snake- woman.jpeg

جویریہ بنت اسماءاپنے چچا س روایت کرتی ہیں کہ انہوں نے بیان کیا کہ میں حج کے لئے قافلے کےساتھ نکلا ، راستے میں ہم نے ایک جگہ پڑاﺅڈالا۔ ہمارے ساتھ ایک عورت بھی تھی ، وہ سو کے اٹھی تو ایک زہر یلا سانپ اس سے چمٹا ہوا تھا۔ سانپ نے اپنے سراوردم کو اس کی چھاتیوں کے درمیان ملائے رکھا تھا ۔ ہم بڑے خوفزدہ ہوگئے ۔ وہاں سے ہجرت کر گئے ، سانپ اسی طرح اس عورت سے چمٹا ہوا تھا ، کسی کو کوئی نقصان نہیں پہنچا رہا تھا۔ یہاں تک کہ ہم حدود حرم میں داخل ہوئے تو سانپ عورت کو چھوڑ کر کہیں گم ہو گیا۔ ہم مکہ مکرمہ گئے ، مناسک حج ادا کئے ، اس کے بعد واپس روانہ ہوئے ۔ جب ہم اس جگہ پہنچے ، جہاں آتے وقت عورت سے سانپ چمٹ گیا تھا ۔ ہم نے اتفاقاً وہاں پڑاﺅ ڈالا ، عورت بے خوف سورہی تھی ، اٹھی تو پھر سانپ چمٹا ہوا ملا۔ روزنامہ امت کے مطابق اس بار سانپ نے زور سے پھنکارا تو وادی سے ہماری طرف بے شمار سانپ نکل آئے ، جنہوں نے (کسی کو کوئی نقصان نہیں پہنچایا ) صرف اس عورت کو کاٹ کاٹ کے بالکل ختم کر دیا ، یہاں تک کہ اس کی صرف ہڈیاں رہ گئیں۔ یہ دیکھ کر ہم خوفزدہ ہوئے اور اس کی باندی جو اس کے ساتھ تھی ، اس سے پوچھا کہ تیرا برا ہو تو ہمیں اس عورت کے بارے میں کچھ بتا کہ یہ کون تھی ؟ ۔۔۔ باندی نے کہا کہ اس عورت نے تین مرتبہ زنا کیا ، تینوں مرتبہ بچہ ہوا ، اس نے ہر مرتبہ بچے کے چولہے میں آگ بھڑکا کر اس میں ڈال دیا۔ (العقوبات الالٰہیتہ ص 202-201)

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here