روزے کا وہ فائدہ جس کے بارے میں گورے سائنسدان بھی اعتراف کرنے پر مجبور ہوگئے

0
378

جدہ (پاکستان ٹوئنٹی فورسیون نیوز)عمومی طورپر یہ کہاجاتاہے کہ رمضان میں روزے رکھنے کی وجہ سے جسم سے فالتو چربی ختم ہوتی ہے اور نظام انہضام ٹھیک ہوتاہے لیکن گورے کہاں مانتے ہیں، ایم آئی ٹی یونیورسٹی کے سائنسدان چوہوں پر تجربات کر کے اس مسئلے کو سمجھنے کی کوشش کر رہے تھے کہ اس دوران اتفاق سے روزے کی افادیت کے متعلق کچھ ایسے انکشافات سامنے آگئے جو سائنسدانوں کے لئے تو بے پناہ حیرت کا باعث بنے لیکن دنیا بھر کے مسلمان کسی سانئسی تحقیق کے بغیر ہی صدیوں سے ان فوائد سے لطف اندوز ہو رہے ہیں۔
ان سائنسدانوں کو معلوم ہوا کہ صرف ایک دن کے لئے روزہ رکھنے سے ہی آنتوں کی بنیادی خلیات کی افزائش نو کا سلسلہ پھر سے بحال ہونا شرو ع ہوجاتا ہے، روزے کے نتیجے میں خلیات گلوکوز کی بجائے فیٹی ایسڈز کی تحلیل شروع کردیتے ہیں جس کے نتیجے میں بنیادی خلیات کی پیدائش نو کا سلسلہ شروع ہوجاتا ہے۔ جسم میں آنے والی اس بڑی تبدیلی کو ایسے لوگوں کے لئے خصوصاً فائدہ مند قرار دیا گیا ہے جو نظام انہضام کی بیماریوں اور انفیکشن میں مبتلا ہوتے ہیں جبکہ کیموتھراپی کرانے والے کینسر کے مریضوں کے لئے بھی اسے فائدہ مندقرار دیا گیا ہے۔ بوڑھوں اور مریضوں کے علاوہ نوجوانوں کو بھی عمومی طور پر اس جسمانی تبدیلی سے فائدہ پہنچتا ہے۔
اسسٹنٹ پروفیسر عمر یلماس نے کہا ”روزے کے آنتوں اور نظام انہضام پر بہت سے اثرات مرتب ہوتے ہیں۔ اس کی وجہ سے ناصرف خلیات کی پیدائش نو ہوتی ہے بلکہ کئی اقسام کی بیماریوں سے تحفظ ملتا ہے اور یہ انفیکشن اورکینسر کے مریضوں کے لئے بھی بہت مفید ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here