چین نے پاکستانی میاں بیوی کو ایسی ذمہ داری سونپ دی جس کی مثال ڈھونڈنا مشکل

0
24
china-river

بیجنگ(پاکستان ٹوئنٹی فورسیون نیوز) چینی شہری انتظامیہ نے پاکستانی جوڑے کو چین میں دریا کا چیف نگراں مقرر کردیا۔

چینی خبر رساں ادارے کے مطابق چین کی شہری حکومت نے پاکستانی جوڑے عائزہ کاشف اور محمد کاشف قاضی کو دریا میں آلودگی کے خلاف کام کرنے والے رضاکاروں کا سربراہ مقرر کردیا ہے۔ عائزہ کاشف شنگھائی شہر کے علاقے ژھانگ جیانگ کے اسکول میں بائیولوجی کی ٹیچر ہیں وہ 2012ء میں اپنے اہل خانہ کے ہمراہ چین منتقل ہوگئی تھیں۔چینی حکومت نے عائزہ کاشف کو دریائے شوانگژن کا انسپکٹر مقرر کردیا۔ ان کے ہمراہ 107 رضاکار کام کرتے ہیں۔ وہ دریا میں پھیلنے والی آلودگی کے خلاف کام کرتی ہیں اور جہاں کہیں کچرا یا گندگی نظر آئے مقامی حکام کو اطلاع کرتی ہیں۔محمد کاشف قاضی پیشے کے اعتبار سے جانوروں کے ڈاکٹر ہیں اور اس کام میں اپنی اہلیہ کا ہاتھ بٹاتے ہیں۔ دریا کے ایک حصے کی نگرانی عائزہ اور دوسرے کی نگرانی ان کے شوہر کرتے ہیں۔ اگرچہ عائزہ کو دیا گیا عہدہ سرکاری نہیں تاہم چینی حکومت کی جانب سے کسی غیر ملکی کو اعزازی عہدہ ملنا بھی غیر معمولی اقدام ہے۔دنیا بھر میں دریاؤں اور سمندروں میں آلودگی کا مسئلہ سنگین صورت اختیار کرگیا ہے۔ انسانی زندگی اور زمین کی بقا کے لیے ضروری سمندر اور دریا پلاسٹک کی تباہ کن آلودگی سے اٹ چکے ہیں، آلودگی کے اس جن کو قابو کرنے کے لیے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات ضروری ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here