دبئی کی ایمنسٹی سکیم کے تحت 6 ماہ کا عارضی ویزہ، وہ تفصیلات جو آپ کو کسی پریشانی سے بچا سکتی ہیں

0
38
six-month-UAE-temporary-visa-granted-to-job-seekers

دبئی (پاکستان 247نیوز) فیڈرل اتھارٹی آف آئیڈنٹٹی اینڈ نیلشنلٹی(ایف اے آئی سی) نے واضح کیا ہے کہ ایمنسٹی سکیم کے تحت روزگار کی تلاش میں آنیوالوں کو جاری کیاجانیوالا چھ ماہ کا عارضی ویزا ریاست چھوڑنے کے بعد قابل استعمال نہیں رہتا، یہ ویزا وہ حقوق فراہم نہیں کرتاجو ریاست کے مقیم افراد کو حاصل ہیں، یہ وضاحت ایک ایسے وقت پر سامنے آئی ہے جب چندہفتے قبل ایک مقامی اخبار نے دعویٰ کیاتھاکہ عارضی ویزا کے حامل افراد چھ ماہ کے عرصے کے دوران یواے ای آاور جاسکتے ہیں، اس پر حکام نے واضح کیاکہ اس ویزاپر کئی مرتبہ ویزاہولڈر ریاست میں نہیں آسکتا۔

خلیج ٹائمز کے مطابق اس ویزاکی فیس 600درہم ہے جس کی ایمنسٹی کے ان خواہشمندوں کو پیشکش کی جاتی ہے جو اپنے تمام جرمانے اداکرچکے ہیں۔ایف اے آئی سی میں ڈائریکٹرریزیڈنس افیئرز بریگیڈیئرسعدی راکن الرشید نے کہاکہ یہ ان لوگوں کے لیے ہے جو ریاست میں قیام کے خواہشمند ہیں اور روزگار کی تلاش میں ہیں لیکن اگر وہ اس عرصے کے دوران نوکری ڈھونڈنے میں ناکام رہتے ہیں تو انہیں ریاست سے جانا ہوگا تاہم ویزٹ ویزا پر دوبارہ آسکتے ہیںکیونکہ اس عارضی ویزاکی دوبارہ تجدید نہیں ہوسکتی ۔

انہوں نے مزید کہاکہ عارضی ویزا کے حامل افراد کسی قسم کا کام نہیں کرسکتے ، انہیں نوکری کی ضرورت ہے اور اس بارے میں کسی بھی کمپنی کے ساتھ معاملات طے ہونے کے بعد وہ کام شروع کرنے سے قبل امپلائمنٹ ویزا حاصل کرسکتی ، کرسکتے ہیں۔حکام نے ریاست میں تاحال غیرقانونی طورپر مقیم افراد سے استدعا کی کہ وہ ایمنسٹی سکیم کے بقیہ عرصہ سے فائدہ اٹھائیں جو 30نومبرکوختم ہونے جارہی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here