صدام حسین کا امریکی فوجیوں کو ٹھکانہ بتانے والے شخص کا پتہ چل گیا

0
273
who-were-behind-kiling-of-saddam-hussain-ex-president-iraq

بغداد(پاکستان 247نیوز) عراق کے سابق صدر صدام حسین کو دسمبر2006ءمیں عیدکے دن سرعام پھانسی دیدی گئی تھی اور اب ایک عرب جریدے نے دعویٰ کیا ہے کہ صدام حسین کے ذاتی محافظ محمد ابراہیم نے امریکی فوج کو ان کے ٹھکانے کی معلومات دی تھیں جس کے بدلے میں اسے اڑھائی کروڑ ڈالر ملے ۔

یہ پڑھیں:بنگلہ دیش بمقابلہ ویسٹ انڈیز: پہلے ٹی 20 میچ میں بنگلادیش کو 9 وکٹوں سے شکست

عربی جریدے الیوم السابع کے حوالے سے خبررساں ایجنسی نے بتایاکہ محمد ابراہیم ہی وہ غدار تھا جس نے اس زرعی فارم کا پتہ امریکی افواج کو بتایا تھا جہاں سابق صدر نے پناہ لیے ہوئے تھے ،محمد ابراہیم کی مداخلت کی تصدیق امریکی فوج کے ترجمان سمیر بھی کرچکے ہیں جنہوں نے کہا تھاکہ رات کو ایک بجے امریکی فوجی ہمارے پاس محمد ابراہیم کو لائے جس نے ہمیں صدام حسین کی کمیں گاہ کا نقشہ بنا کردیاتھا۔صرف یہی نہیں بلکہ محمد ابراہیم امریکی فوج کے چاک و چوبند دستے کو اپنے ہمراہ زرعی فارم لے گیا جہاں اس کے مالک قیس نامق سے ڈانٹ ڈپٹ کے ذریعے صدام کی پناہ گاہ معلوم کرنے کی کوشش کی لیکن اس نے نہیں بتایا اورمسلسل لاعلمی ظاہر کی۔

رپورٹس کے مطابق جواب لینے میں ناکامی کے بعد محمد ابراہیم نے وہاں پڑی ایک چٹائی پر پریڈ کے انداز میں زور سے پاﺅںمارا اور کہا کہ یہ ہے وہ جگہ جہاں پرصدام حسین چھپا ہوا ہے۔اس کے بعد امریکی فوجی اس چٹائی پر جھپٹے اور اس کے نیچے سے ایک سرنگ نما گڑھا ملا اور یہاں سے امریکی فوجی چند لمحوں میں صدام حسین تک پہنچ چکے تھے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here