حلالہ کے نام پر ملی نوجوان لڑکی کوادھیڑعمر شوہر نے طلاق دینے سے انکار کردیااور پھر۔ ۔ ۔

0
90

نئی دہلی (پاکستان ٹوئنٹی فورسیون نیوز) بھارتی ریاست اتراکھنڈ میں ایک 65 سالہ شہری نے حلالہ کے نام پر ملنے والی نوجوان خاتون کو طلاق دینے سے انکار کردیا، خاتون جوہی کی طلاق 2013 میں ہوئی تھی لیکن اب وہ جوڑا دوبارہ شادی کا خواہشمند تھا جس کے لیے عمر رسیدہ شخص سے حلالہ کے لیے مشروط نکاح کرلیا۔ واضح رہے کہ حلالہ کے نام پر مشروط نکاح کرنا غیر شرعی عمل ہے۔
بھارتی میڈیا کے مطابق عمر رسیدہ شخص نے پہلے اس بات کی یقین دہانی کروائی تھی کہ وہ حلالہ کرتے ہی خاتون کو طلاق دے دے گا تاہم اب انہوں نے کم عمر بیوی کو طلاق دینے سے انکار کردیا۔شوہر کے طلاق نہ دینے پر متاثرہ خاتون نے اقلیتی امور کے یونین وزیر مختار عباسی کی بہن فرحت نقوی سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے بھائی کو اس معاملے کا نوٹس لیں۔
رپورٹ سے پتہ چلتا ہے کہ جوہی نے اپنے پہلے شوہر جاوید سے 2010 میں شادی کی تھی اور 3 سال کے اندر ان کے ہاں 2 بیٹے ہوئے، جس کی بعد تنازعات کی وجہ سے دونوں میں 2013 میں طلاق ہوگئی اور بچوں کو دیکھتے ہوئے وہ پہلے شوہر سے دوبارہ نکاح چاہتی ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here