ڈوبنے والی دو سعودی بہنوں نے خود کشی کی تھی،طبی معائنہ کار

0
89
saudi arabia two sisters suicide

واشنگٹن(پاکستان247نیوز)22سالہ روطا نہ فاریہ اور اس کی 16سالہ بہن طالا کی لاشیں دریائے ہڈسن کے کناے دسمبرکے آخری دنوں میں بغیر کسی تشدد کے نشان کے کالے کپڑوں میں ملیں دونوں کے کلائیاں اور ٹخنے بندھے ہوئے تھے اوران کی موت کے بعد پولیس نے بتایا ہے کہ دونوں بہنوں نے پناہ کیلئے درخواست دی ہوئی تھی ۔ اس سے زیادہ پولیس کی طرف سے تفصیل نہیں بتائی گئی۔

امریکہ میں سعودی سفارتخانے کی ترجمان نے اپنے ایک ٹویٹر پیغام میں سعودی سفارتخانہ کی طرف سے انہیں امریکی میں پناہ لینے سے منع کرنے کی خبر کی تردید کرتے ہوئے اسے غلط قرار دیا ہے۔ سعودی بہنیں ورجینیا میں اپنے گھر سے کئی مرتبہ بھاگ چکی تھیں جہاں وہ 2017کے آخر سے نہیں رہیں۔

امریکی میڈیا کے مطابق نیویارک پولیس کے ترجمان نے بتایا کہ سعودی بہنیں کسی پناہ گاہ میں نہیں رہیں اور اگست میں ورجینیا چھوڑ کر نیویارک چلی گئیں۔ جہاں وہ کئی مختلف قسم کے اعلی ہوٹلوں میں رہائش پزیر رہیںاور کریڈٹ کارڈ کا استعمال زیادہ کیا۔ایک عینی شاہد نے بتایا کہ اس نے دو نوجوان خواتین کو 24اکتوبر کی صبح دریائے ہڈسن کے نزدیک کھیل کے میدان میں دیکھا جنہیں دیکھنے سے لگتا تھا کہ وہ عبادت کر رہی تھیں۔

امریکی میڈیا کے مطابق پولیس نے کہا ہے کہ سعودی بہنوں نے اس بات کا اشارہ دیا تھا کہ وہ سعودیہ واپس جانے کی بجائے اپنے آپ کو نقصان پہنچا دیں گی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here