بچت مہم کا دعویٰ لیکن پنجاب اسمبلی کا بجٹ اجلاس قوم کو کتنے میں پڑا؟ یقین کرنا مشکل

0
46
punjab-assembly-budget-session-cost-up-to-3-crore-rupees

لاہور(پاکستان ٹوئنٹی فورسیون نیوز) حکومت نے اقتدار میں آتے ہی بچت اور قوم کے ٹیکس کا پیسہ بچانے کا دعویٰ کیا ، شہبازشریف کی اسمبلی میں حاضری کے موقع پر بھی وزیراطلاعات نے کروڑوں روپے کا خرچہ سنایا لیکن اب انکشاف ہوا ہے کہ اپوزیشن کے بائیکاٹ کے باوجود پنجاب اسمبلی کا غیرمعینہ مدت کیلئے ملتوی ہونیوالا بجٹ اجلاس سوا3 کروڑ روپے میں پڑا۔ تمام اراکین کو ہر اجلاس کے دوران 2500روپے ٹی اے ڈی اے اور 600روپے ریفریش منٹ سمیت ٹوٹل 3100روپے یومیہ دئیے جاتے ہیں تاہم اراکین کی حاضری کسی روز بھی سو فیصد نہیں رہی ،10روزہ اجلاس میں کل 6نشستیں ہوئیں جن میں اراکین اسمبلی کی کل 1025حاضریاں لگائی گئیں۔
دنیا نیوز کے مطابق6روز میں حاضر ہونے والے اراکین کو ٹوٹل 3177500روپے دئیے جائیں گے جبکہ 4 چھٹیوں کے علاوہ اجلاس شروع ہونے سے تین روز پہلے اور تین دن بعد کے کل 10روز کا پورا معاوضہ تمام370 اراکین کو 11470000روپے بھی ملیں گے یوں کل 10روز کے اجلاس کے 14647500روپے اراکین اسمبلی کو دئیے جائیں گے ۔
اسی طرح اسمبلی کے چھوٹے سٹاف کو 300 روپے تک روزانہ اضافی دئیے جاتے ہیں جبکہ اسمبلی کے دوسرے سٹاف کو اجلاس شروع ہونے کے سات روز پہلے اور سات روز بعد بھی اضافی اعزازیہ دیا جاتا ہے یوں پنجاب اسمبلی کے پورے عملہ کو 24روز کا پورا عزازیہ ملے گا جبکہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے بھی پنجاب اسمبلی کے سارے عملہ کو دو ماہ کی اضافی تنخواہ دینے کا اعلان کیا ہے ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here