منع کرنے کے باوجود میسج کرنے کی سزا کتنے سال ہے؟ آپ بھی جانئے

0
77
federal investigation agency

 

 اسلام آباد(پاکستان247نیوز)سائبر کرائم کے وکیل ذیشان ریاض نے کہا ہے کہ منع کرنے کے باوجود میسج کیا جائے تو یہ ہراسمنٹ کے زمرے میں آتا ہے جس کی سزا تین سال قید ہے۔

ذیشان ریاض نے تفصیل بتاتے ہوئے کہا ہراسمنٹ جب سائبر اسپیس میں آجاتی ہے تو یہ اور بھی زیادہ خطرناک ہو جاتی ہے جوکہ دیکھنے والے کیلئے صرف ایک انٹرٹینمنٹ ہوتی ہے ۔ نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے ذیشان ریاض نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک کے بارے میں بات کرتے ہوئے بتایا کہ فیس بک پر کسی کو ضرورت کے بغیر فرینڈ ریکوئسٹ بھیجنا قانونی کی نظر میں ہراسمنٹ کے زمرے میں نہیں آتا لیکن بہرحال اخلاقی طور پر غلط ہے۔ فیک فیس بک اکاونٹس کے حوالے سے خبردار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اگرچہ فیک فیس بک پروفائل بنانا لوگوں کا مشغلہ بن چکا ہے لیکن اس پر کارروائیاں کی جا رہی ہیں۔ فیک اکاونٹ بنانا یا کسی کی تصویر استعمال کرنے کی سزا بھی تین سال قید ہے۔
سائبر کرائم کے وکیل نے بتایا کہ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن (PTA) نے سائبر جرائم کی روک تھام کیلئے شکایا ت درج کرانے کیلئے سائبر ویجیلنس ڈویژن کا شعبہ قائم کر دیا ہے۔ لنک

http://nr3c.gov.pk/

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here