ادھار رقم واپس نہ ہونے پر نوجوان لڑکی کو بدفعلی کا نشانہ بنادیاگیا

0
51
Teenage-girl-in-Muzaffargarh-allegedly-sexually-assaulted-over-money-dispute

مظفرگڑھ (پاکستان247نیوز ) جنوبی پنجاب میں ادھار لیے گئے چار ہزار روپے واپس نہ کرنے پر نوجوان لڑکی کو بدفعلی کا نشانہ بنادیاگیا اور مرکزی ملزم مبینہ طورپر صدرتھانے کے سب انسپکٹر کا کلرک ہے ۔
ڈان نیوز کے مطابق مظفر گڑھ کی تحصیل علی پور میںادھار کی رقم کی عدم ادائیگی پر غریب باپ کی 17 سالہ لڑکی کا مبینہ طور پر اجتماعی ریپ کا نشانہ بنادیاگیا۔متاثرہ لڑکی کے والد کی طرف سے درج کرائے گئے مقدمے کے مطابق وہ ایک مزدور ہے اورحسب معمول کام پر تھا کہ اس کی اہلیہ نے فون پر بتایاکہ جس شخص سے 4 ہزار روپے ادھار لیا تھا ،اس نے اپنے دو ساتھیوں کے ہمراہ ان کی 17 سالہ بیٹی کو اغوا کرلیا ہے، مرکزی ملزم نے دھمکی دی ہے کہ اگر قرض واپس کریں تو وہ ان کی بیٹی کو واپس پہنچا دیں گے۔
ایف آئی آر کے مطابق لڑکی کے والد نے کسی کی مدد سے ملزم کو بذریعہ موبائل فون رقم منتقل کی جس کے بعد انہیں فون پر اپنی بیٹی سے بات کرنے کی اجازت دی گئی، فون پر بیٹی نے روتے ہوئے باپ کو بتایا کہ مرکزی ملزم، اپنے ساتھیوں کے ہمراہ اسے ایک گھر پر لائے اوراسلحہ کے زور پر تینوں نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا،متاثرہ لڑکی کے والد جب جگہ معلوم کرکے اس گھر پر پہنچے تو مرکزی ملزم اپنے ساتھیوں سمیت موقع سے فرار ہوگئے۔آخری اطلاعات تک کوئی ملزم گرفتارنہیں ہوسکا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here